dua mangne ka saleeqa || urdu

dua mangne ka saleeqa
Dua mangne ka saleeqa 

دعا مانگنے کا سلیقہ

ایک بزرگ فرماتے ہیں میں نے دعا مانگنے کا طریقہ اپنی بیوی سے سیکھا۔ سیکھنے والے تو اپنے بچوں سے بھی سیکھ لیتا ہے، سیکھنے والے تو ہر ایک سے سیکھتے ہیں۔ وہ کہتے ہیں میں نے دعا مانگنے کا سلیقہ اپنی بیوی سے سیکھا ہے۔ حضرت وہ کس طرح؟ فرمایا میری بیوی نے مجھے کوئی کام بتایا، کچھ پیسوں کی ضرورت کے لیے کہا تو میں نے اسے کہا کہ ابھی میرے پاس نہیں ہیں کچھ دنوں میں آتے ہیں تو میں دے دوں گا۔

عورتوں کی عادت ہوتی ہے وہ بار بار یاد کراتی ہیں۔ دو چار دنوں کے بعد پھر اس نے کہا حضرت وہ میں نے کہا تھا کچھ پیسے۔ میں نے اسے کہا کہ ابھی میرے پاس نہیں ہیں کچھ دنوں میں ملتے ہیں تو میں تمہیں دے دوں گا۔ اس نے کچھ دنوں کے بعد پھر کہا حضور وہ میں نے کچھ پیسے کہے تھے۔ فرماتے ہیں میں نے ڈانٹ دیا میں نے کہا کہ کیا تو روز مجھے شرمندہ کرتی ہے کہا نا میرے پاس نہیں ہیں ہوں گے تو دے دوں گا، تو روز یاد کراتی ہے۔

فرماتے ہیں اس نے پہلے تو میری ڈانٹ کو سہا پھر میرے سخت جملوں نے اس کی آنکھوں میں آنسو پیدا کر دیے پھر اس نے اپنے آنچل میں اپنے اس دکھ کو سمیٹا اور پھر اس نے ایک جملہ کہا تو میں رو پڑا۔ اور مجھے اپنے رب سے مانگنے کا طریقہ اگیا مجھے کہنے لگی حضرت جی اپ نے ڈانٹ دیا میں نے سہ لیا پر آپ ہی میرے شوہر ہیں بتائیں آپ سے نہ کہوں تو میں کس سے جا کے کہوں؟ فرماتے ہیں میں رو پڑا اور میں کھل کے رویا اور میں تڑپ کے رویا اور پھر میری سسکیاں بند گئیں تو مجھے کہنے لگی آپ کو کیا ہوا؟ میں نے کہا مجھے بھی دعا مانگنی آگئی ہے۔ جب میں اسے کہوں گا اے اللہ تو ہی میرا رب ہے، میں تجھ سے نہ کہوں تو میں کس سے جا کے کہوں۔ میں کیوں کسی بندے سے سوال کروں، میں کیوں کسی دنیا دار سے کہوں۔ میں تیرے بندوں کا نیک بندوں کا وسیلہ لے کے، تیرے محبوب کی غلامی لے کے تیری بارگاہ میں آیا، تجھ سے نہ مانگوں تو کس سے مانگوں۔ سمجھ آگئی ہے جب میں اس رنگ میں مانگوں گا تو میرا رب میرے اوپر بڑا ہی فضل فرمائے گا، وہ میرے اوپر بڑی رحمت کرے گا وہ میرے لیے آسانیاں کرے گا۔۔۔۔۔۔۔

Leave a Comment