Knowledge of Socrates || سقراط کا علم

سقراط کا علم
سقراط کا علم

ایک پادری نے اعلان کیا کہ جس کسی نے بھی جنت خریدنی ہو وہ ہم سے خرید کر سکتا ہے۔  

لوگ اپنی جہالت کے وجہ سے جوق در جوق منہ مانگی رقم دینے کے لیے اس پادری کے پاس پہنچ رہے تھے تاکہ جنت خریدی جا سکے ۔ایک عقل مند شخص نے اپنے علم کی وجہ سے ان کو سمجھانے کی بڑی کوشش کی کہ یہ ایک احمقانہ حرکت ہے لیکن بے سود ۔پھر اس کے ذہن میں ایک ترکیب آئی وہ جنت کے انچارج پادری کے پاس پہنچ گیا اور اسے کہا کہ مجھے جہنم خریدنی ہے کتنے پیسے؟ اس نے کہا جہنم ۔اس نے کہا ہاں جی ۔پادری نے سوچا کہ اپ جہنم بیچنے کے بھی پیسے ملیں گے تو اس نے بغیر سوچے کہا کہ تین سکے۔ اس شخص نے تین سکے ادا کیے اور خوشی خوشی چرچ سے باہر آگیا اور شہر کے ایک چوک میں کھڑے ہو کر اس نے اعلان کیا کہ اب میں کسی کو بھی جہنم میں نہیں جانے دوں گا کیونکہ یہ جہنم کی دستاویز ہیں میں جہنم خرید کر لایا ہوں۔ اور اب کسی کو بھی جنت خریدنے کی ضرورت نہیں کیونکہ میں جہنم میں کسی کو جانے ہی نہیں دوں گا۔

 یہ شخص تھا سقراط جس نے اپنے علم کی وجہ سے لوگوں کی لاعلمی کی وجہ سے کی گئی حماقت سے ان کو نجات دلائی۔

دنیا میں ایک ہی خوبی ہے اور وہ ہے آگاہی۔ اور جہالت گناہ ہے۔

اور یہ بھی سقراط نے کہا تھا کہ جس نے ایک بار سچائی کا مزہ چکھ لیا وہ کبھی بھی جہالت کی طرف واپس جانا نہیں جائے گا۔۔۔۔۔۔

Leave a Comment