Ya Allah tu kitna bara hae || یااللہ تو کتنا بڑا ہے

یااللہ تو کتنا بڑا ہے
یااللہ تو کتنا بڑا ہے


حضرت موسیٰ علیہ الصلوۃ والسلام نے ایک مرتبہ اللہ سے سوال پوچھا کہ یا اللہ اگر یہ زمین و آسمان تیرے نافرمان بن جائیں تو تو کیا کرے گا ؟
اللہ نے فرمایا اے موسیٰ! یہ میرے نافرمان بن ہی نہیں سکتے ۔تو دوبارہ سے انہوں نے وہی سوال پوچھا کہ یا اللہ اپ مجھے بتائیں کہ اگر یہ زمین آسمان تیرے نافرمان بن جائیں تو تو کیا کرے گا ؟تو اللہ نے فرمایا اے موسیٰ میری چراگاہوں میں سے ایک چراگاہ میں ایک جانور ہے جو میں ان زمین وآسمان کے اوپر چھوڑ دوں گا اور وہ ان زمین و آسمان کا ایک لقمہ بنا کے کھا جائے گا۔ کیا فرمایا میری چراگاہوں میں سے ایک چراگاہ میں ایک جانور ہے جو میں ان زمین و آسمان کے اوپر چھوڑ دوں گا اور وہ ان زمین و آسمان کا ایک لقمہ بنا کر کھا جائے گا۔ تو موسی علیہ الصلاۃ والسلام ایک دم حیران پریشان ہو گئے کہ یا اللہ وہ جانور کتنا بڑا ہوگا اور پھر وہ چراہگاہوں میں سے ایک چراگاہ میں چر رہا ہے، کھا رہا ہے، پی رہا ہے اور وہ چراگاہ کتنی بڑی ہوگی جہاں اتنی بڑی بلا رہتی ہے۔ اور وہ بھی اللہ کے حکم کے تابع ہے۔ سبحان اللہ
 پھر اسی طرح حدیث میں آتا ہے اللہ کے فرشتوں میں سے ایک فرشتہ ہے جس کا نام ہے صدلوقن۔صدلوقن جس فرشتے کا نام ہے اور ساتوں سمندر کا پانی اس کے ایک ناخن کے انگوٹھے کے اوپر یاانگوٹھے کے ناخن کے اوپر رکھ دیا جائے تو کتابوں میں لکھا ہوا ہے کہ ایک قطرہ بھی زمین کے اوپر نہیں گرے گا۔ سبحان اللہ 
جو اللہ اتنی بڑی مخلوقات کو اپنے تابع کیا ہوا ہے، جو اللہ اتنے زمین و آسمان کی مخلوقات کو اپنے حکم کا غلام بنایا ہوا ہے کہ وہ ایک پتہ بھی اس کے امر کے بغیر ہل نہیں سکتا وہ ان جانوروں کو کھلا رہا ہے، پلا رہا ہے ،سارے نظام کو ان کے جانتا ہے اور یہ چھ فٹ کا انسان ہے صرف چھ فٹ کا انسان ہے جس کو اللہ صبح بھی بلاتے ہیں حی الصلوٰۃ،حی الفلاح، آ جاؤ نماز کی طرف، آ جاؤ کامیابی کی طرف۔ ظہر کے وقت بھی بلایا جاتا ہے، عصر کے وقت بھی بلایا جاتا ہے۔ اسی مسلمان سے اسی انسان سے تقاضا کیا جاتا ہے کہ جھوٹ مت بولو ، دھوکہ مت دو، کسی سے فراڈ مت کرو یہ کوئی مسجد کا مولوی نہیں بول رہا ہوتا آپ کو ۔یہ اللہ کے قرآن کے اندر وہ آیات ہیں جن کے اندر کسی کا بھی اختلاف نہیں ہے۔ سب مانتے ہیں کہ جھوٹ بولنا بری بات ہے، دھوکہ دینا بری بات ہے، ماں باپ کی نافرمانی کرنا بری بات ہے۔ یہ وہ آیات ہیں جن کے اندر کسی کا اختلاف ہی نہیں ہے۔
 اللہ کے بندو اپنی زندگی کو چینج کرو  ۔نماز کے اوپر سب کام کو چھوڑ کے مسجد کی طرف اآجاؤ ۔جھوٹ مت بولو اپنی تجارت کے اندر دھوکہ مت دو ۔اور پانچ سے دس منٹ اللہ کا قرآن پڑھو اور دیکھو کہ اللہ رب العزت ہم سے کیا فرما رہے ہیں۔ اس کے اوپر عمل کرو۔

 اللہ ہم سب کی زندگیوں کے اندر برکتیں عطا فرمائے ۔خاتم بالایمان کی دعائیں مانگا کرو ۔قرآن کے حکم کے مطابق زندگی کو اپنا لو تمہاری دنیا بھی بنے گی تمہاری اخرت بھی بنے گی۔ نبی علیہ الصلوۃ والسلام کی ایک ایک سنت کے اوپر ہمیں فخر کرنے والا اللہ بنائے۔ اس کے اوپر فخر کرو اور اللہ کے نبی کی سنتوں کو زندہ کرو اپنے اندر اپنے گھر والوں کے اندر ان کی تعلیمات کو عام کرو۔ یہی دنیا میں آنے کا مقصد ہے کہ ہم سے ہمارا اللہ راضی ہو جائے۔ بس اس کے علاوہ اس دنیا کے اندر آنے کا انسان کا کوئی مقصد نہیں ہے۔ اللہ ہم سب کا خاتم بالایمان فرمائے دنیا کے اندر بھی اللہ ہم سب کو کامیاب کرے اللہ اخرت بھی بنائے دنیا بھی بنائے ہماری ۔۔۔۔۔

1 thought on “Ya Allah tu kitna bara hae || یااللہ تو کتنا بڑا ہے”

Leave a Comment